بھجن کے بہانے مسلمانوں کے خلاف زہر اگلا گیا: ہندو راشٹر بنانے کےلیے گھروں میں ہتھیار رکھنے کی تلقین کرنے والے ملک کے غدار، سوشل میڈیا پر فرقہ پرستوں کو کرارا جواب لیکن پولیس کاروائی ندارد

اترپردیش کے اٹاوا میں بھجن کا پروگرام منعقد کیا گیا جس میں مسلمانوں کے خلاف جم کر نفرت انگیز باتیں کی گئی اور ان کے خلاف ہتھیار اٹھانے کی تلقین کی گئی۔ ہندوتوا گلوکار دھرمیندر پانڈے نے ہندوؤں سے ہتھیار اٹھانے اور سیکولر ملک بھارت کو ’ہندو راشٹر‘ بنانے کےلیے تیار رہنے کی اپیل کی۔


ایک جاگرن میں جو خالص مذہبی پروگرام ہوتا ہے میں دھرمیندر بھجن گانے کے بجائے صرف اور صرف مسلمانوں کے خلاف کھل کر زہر اگلا اور ہندوؤں کو مسلمانوں کے خلاف اکسانے کی کوشش کی۔ اس پروگرام کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگیا۔

سوشل میڈیا پر اس نفرت انگیز پروگرام پر جم کر تنقید کی گئی۔ ایک صارف نے کہا کہ سیکولر ملک بھارت کو ہندو راشٹر بنانے کی بات کرنے والے دراصل، ملک کے غدار ہیں اور ایسے لوگوں کے خلاف یو اے پی اے کے تحت کاروائی کی جانی چاہئے۔ اسی طرح سے دیگر صارفین نے بھی نفرت انگیز نعروں پر کڑی تنقید کی اور حکومت سے ایسے افراد کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں